Junaid Jazib
خبر و تبصرہ: لب آزاد ہیں تیرے

بوجھ

خون پسینے سے سینچے ہوئے ان تین دیو قامت پیڑوں کو کاٹ بیچنے کا دکھ اسے ضرور ہوا تھا جن سے مشین کی قیمت ادا کی گئی تھی لیکن اب وہ پوری طرح مطمئن تھا۔ مشین بوجھ […]

Iftikhar Baloch
جمالِ ادب و شہرِ فنون

بلب

بلب افسانہ از، افتخار بلوچ لوگ دیہاتوں سے ہجرت کرنے لگے۔ دریاؤں کے پانی کم ہوئے تو زراعت کو گرہن لگ گیا۔ شہر آباد تو تھے ہی اب کسی بیل کی مانند ہر سمت میں […]

Mir Nasrullah Sajidi میر نصراللہ ساجدی
خبر و تبصرہ: لب آزاد ہیں تیرے

درد نا تمام 

مخمور نگاہوں والی ماہکاں گائل ہو کر ایک طرف چل دی۔ بے خود اور سرشار وہ نو جوان سے ملنے لگی۔ نو جوان کالج کا طالبِ علم تھا۔ عشق کے داؤ پیچ اور درد نا تمام […]

Waqas Alam Angaria
جمالِ ادب و شہرِ فنون

بھکاریوں کا سراب 

بھکاریوں کا سراب افسانہ از، وقاص عالم انگاریہ یہ شاید اس کا پہلا موقع تھا جب رفاقت کسی مغربی طرز کی محفل میں بیٹھا ہو۔ اس کی زندگی نہایت سادی تھی اور اسے پہلی دفعہ […]

اَن کہی فریاد
جمالِ ادب و شہرِ فنون

اَن کہی فریاد

سکینہ نے روتے ہوئے دربار کو چھوڑ دیا، بادشاہ کو یہ عمل ہر گز پسند نہ آیا۔ اِس سارے معاملے کے بعد بادشاہ کی خوشی کا وہ عالَم نہ تھا جو سکینہ کی سکینہ کے گاؤں […]

Iftikhar Baloch
جمالِ ادب و شہرِ فنون

رکشا ڈرائیور 

اسی وقت سڑک سے ایک تیز رفتار گاڑی زناٹے سے گزری۔ ایسی چپ میں جس کی آواز نے کمپنی، دفتر، خواجہ صاحب اور ندا کو ہوا میں تحلیل کردیا اور رکشا ڈرائیور راشد رہ گیا۔ […]

Hussain Mirza
جمالِ ادب و شہرِ فنون

شہر میں میلہ

غصہ اُس کے سخت الفاظ اور کڑک دار لہجے میں مُنتقل ہو گیا۔ ایک تجسس بھری آواز کے ساتھ اُس نے امجد سے پوچھا، “تم نے میرے بارے میں کیا لکھا ہے؟ شہر میں میلہ” […]

Naseer Ahmed, the writer
جمالِ ادب و شہرِ فنون

کیرولین جنگل میں

کیرولین جنگل میں (بَہ نام  نریندر مودی) از، نصیر احمد  شب سیاہ میں گم کردہ راہ کیرولین ایک گھنے جھنڈ میں شمعوں کی طرح  روشن اپنی آنکھوں کی مدد سے کسی رستے کے نشانات ڈھونڈ […]

آتشیں بلاؤز
جمالِ ادب و شہرِ فنون

آتشیں بلاؤز 

آتشیں بلاؤز  کہانی از، نعیم بیگ یہ ان دنوں کی بات ہے جب ہم چھوٹے سے قصبے کی گندی سی گلی میں کرایے کے ایک کمرے میں اپنی زندگی کے مشکل ترین دن گزار رہے […]

سارہ
خبر و تبصرہ: لب آزاد ہیں تیرے

سارہ

سارہ کہانی از، نادیہ عنبر لودھی شام کے ڈھلتے منظر نامے سے چند امید کے جگنو چننا کسے مرغوب نہیں ہے۔ لیکن تنہائی اس کے قدموں میں حائل تھی۔ اس کا نام سارہ تھا۔ عام […]