Naseer Ahmed
جمالِ ادب و شہرِ فنون

خاکم کہ ہستم

خاکم کہ ہستم از، نصیر احمد پیٹر: سنو، اپنا تماشا ختم ہوا۔ اپنی بازی تمام ہوئی۔ مختصر یہ کہ ہم ہار گئے۔ اپنا کردار نبھا نہ سکے۔ نہ دیکھنے سننے والے مسحور ہوئے، نہ اپنے […]

Naseer Ahmed
جمالِ ادب و شہرِ فنون

تفسیریں ، کہانی

تفسیریں از، نصیر احمد دوست تو اب کافی مشہور ہو گئے ہیں۔ سچ کی نا موجودگی کے گِلے کرتے اور سچ کی بحالی کی تمنا کرتے کتنے بھلے لگتے ہیں۔ بات بھی ٹھیک ہے، سچ […]

Naseer Ahmed
خبر و تبصرہ: لب آزاد ہیں تیرے

کربلا

کربلا از، نصیر احمد قتل گاہوں سے چن کر ہمارے علم اور بھی نکلیں گے عُشاق کے قافلے جن کی راہِ طلب سے ہمارے قدم مختصر کر چلے درد کے فاصلے ظالم گویا ہوا۔ وہ […]

Naseer Ahmed
جمالِ ادب و شہرِ فنون

مائرہ کا گیت

مائرہ کا گیت از، نصیر احمد دوستو! اسے پہلی بار میں نے مائرہ کے گیت کے آغاز سے چند لمحے پہلے ہال میں دیکھا تھا۔ میں اپنی سہیلیوں کے سنگ بے تابانہ اور والہانہ ہال […]

Naseer Ahmed
جمالِ ادب و شہرِ فنون

اظہار عظمت

اظہار عظمت از، نصیر احمد وہ ایک بھٹکتی ہوئی روح تھی جو بھٹکتے بھٹکتے پہاڑوں سے گھری ہوئی اس وادی میں آ دھمکی تھی جہاں کی صبحیں کسی ماہ رخ کی برقع کشائی کا منظر […]

انسان سازی
مطالعۂ خاص و فکر افروز

انسان سازی

انسان سازی از، نصیر احمد دوش ديدم که ملائک در ميخانه زدند‬ ‫گل آدم بسـرشتـنــد و به پيمانه زدند‬ ‫حافظ یہ تو ہے انسان سازی کام ہی ایسا ہے کہ پارسائی کا احساس فزوں ہو […]