مصنف اور تصنیف و تالیف: روزنِ تبصرۂِ کُتب

ملکۂ ترنم نور جہاں:جہاں سُر آ کے ٹھہر ے

پروفیسر شہباز علی   حوالہ جات:۔ ۱؂ محمد شکیل، مادرِ موسیقی نور جہاں، حیدر پبلی کیشنز، ۳۸ غزنی سٹریٹ اُردو بازار لاہور، ۲۰۰۱ء ، ص ۲۸ ۲؂ سکے دار ، ہُوک ، مطبوعہ حکایات ،F […]

Qasim Yaqoob aik Rozan
ماحولیات، پائیدار مستقبل اور تعلیم و ترقیات

علم اپنے پیداواری اذہان سے اجنبی کیوں ہے؟

قاسم یعقوب آئی کے ایف کے مقاصدکا ایک جائزہ کیا علم اپنے پیداواری اذہان سے اجنبی بھی ہوتا ہے؟ علم جب اپنے پیداکار ذہن سے ایک فاصلہ پیداکر لے تو اس کا مطلب ہے کہ […]

مطالعۂ خاص و فکر افروز

ہندو مائتھالوجی میں عورت کا حسن

ہندو مائتھالوجی میں عورت کا حسن از، ڈاکٹر کوثر محمود ہندو مائتھا لوجی سے جو کامل ترین عورت کا مثالیہ بنایا جا سکتا ہے۔ اُس میں لا محالہ اوشا، سیتا، پاربتی، دروپدی، شکنتلا اور دمینتی […]

فارینہ الماس Farina Almas
خبر و تبصرہ: لب آزاد ہیں تیرے

اچھے اور برے گمان 

(فارینہ الماس)  کہتے ہیں کہ ایک بستی میں صرف چار افراد آباد تھے۔ وہ چاروں کسی نہ کسی کمتری کا بوجھ اٹھائے ہوئے تھے۔ ایک نابینا، دوسرا بہرا، تیسرا نیم برہنہ اور مفلس اور چوتھا […]

مطالعۂ خاص و فکر افروز

آئی کے ایف : علم کو کیوں کر مقامی ضرورتوں سے ہم آہنگ کیا جاسکتا ہے؟

(ناصر عباس نیر) آئی کے ایف: چند ابتدائی باتیں علم کو دیسی بنانے(انڈیجنائزنگ) کا عمل ،سادہ ترین لفظوں میں کسی بھی علم کو ،خواہ وہ کہیں سے مستعار لیا ہو، یا خود تخلیق کیا ہو، […]