Yasser Chattha
خبر و تبصرہ: لب آزاد ہیں تیرے

ریپ، ہراسانی جیسے جرائم کو شریف مردوں کی ہتکِ عزت کا مسئلہ بنانا

کیا آپ احباب خواہ مہ خواہ کسی معاملے کو ضرورت سے زیادہ مرکزِ نگاہ نہیں بنا رہے؟ جس معاملے کو مکالمے کا محض فُٹ نوٹ بنایا جا سکتا تھا، اسے عنوان بنانا! آہ مرد […]

Yasser Chattha
خبر و تبصرہ: لب آزاد ہیں تیرے

سید کاشف رضا کا کچھوا ہی جیتا ہے

ناول اچھا لگا اور دل ہی دل میں سوچا کہ یار چیز اچھی بن گئی ہے اور خدشہ ہوا کہ یہاں کی مارکیٹ میں جانے کیسے چل پائے گی۔ یار لوگ ارتکاز توجہ کے مسائل کا بہت بڑا […]

Yasser Chattha
ماحولیات، پائیدار مستقبل اور تعلیم و ترقیات

اپنے جیسے گاؤں کے سکول کے نصاب اور ہم نصاب 

سائیکل کی صفائی کا فریضہ ہمیشہ انھی بچوں کو سونپا جاتا جن کا ناشتہ اور گھر سے آئی “آدھی چھٹی” کے وقت کی چائے اس وقت کی پنجاب فوڈ اتھارٹی کے مسلمہ معیاروں کے ان […]

Yasser Chattha
خبر و تبصرہ: لب آزاد ہیں تیرے

آؤ ساجن پھر کوئی اقامہ ڈھونڈتے ہیں…؟

کیا کریں، اچھا کیسے سوچیں؟ کیا ہماری یادداشت اتنی بھی نحیف نہیں کہ اربابِ فیض آباد مجلس، اور کوئٹہ کمیشن کے سزاواروں کی عادتوں اور خصلتوں کو یَک سَر بھول جائیں؟ […]

Tariq Aziz
جمالِ ادب و شہرِ فنون

سنتے کانو، دیکھتی آنکھو، آپ کو طارق عزیز کا خدا حافظ

جب پاکستان نے نومبر 1964 میں لاہور سے ٹیلی ویژن کی ابتدائی نشریات کا آغاز ہوا، پی ٹی وی کے پہلے مرد پی ٹی وی اناؤنسر طارق عزیز ہی تھے۔ وہ پہلے شخص تھے جنھوں نے […]

Yasser Chattha
خبر و تبصرہ: لب آزاد ہیں تیرے

پاکستان قرضے کیوں لیتا ہے؟ 

جتنی ہماری ریاست کی آمدنی ہے، اور جتنے اُس کے خرچے ہیں ان کے فرق کو پورا کرنے کے لیے۔ یہ جمع تفریق تو سادی سی ہے، لیکن اسے جادو گر گھماتے بہت ہیں۔ اس دوران لوگ […]

Yasser Chattha
جمالِ ادب و شہرِ فنون

کُھرا، واش روم، اور کتنے درد و آلام منفی کیے تو یہ مضمون بنا

اس طرح دردِ زِہ، اپنی سماجیات میں اس وقت ہی ہوتی تھی جب بچے دائی کے ہاتھوں، یا گھر میں، یا کھیت کھلیانوں، بَنّے وَٹّوں پر خود بَہ خود پیدا ہو جاتے تھے، کچھ ان […]

Yasser Chattha
جمالِ ادب و شہرِ فنون

آخری پَتے کی اسطورہ

کرونا سے گُھٹتی، سسکتی، مرتی سانسوں کے اندر اندر وہ بولا:
“کیا میں چوتھی بار The Last Leaf پڑھ سکوں گا؟”
اُس کی یہ بات سن کر دیوار کی دَرز یا تریڑ میں اُگا پر […]

Yasser Chattha
خبر و تبصرہ: لب آزاد ہیں تیرے

رام بھلی کرے گا، تو اللہ اللہ کر… بلادِ ہینڈسم سے ایک خط

انھیں یہ کرونا لا وجود چیز لگتا ہے؛ ماسک سے ان کی سانس گھٹتی یے۔ شاید یہ صرف حُوروں کو چشمِ تخیل میں لا سکنے کے ہی تربیت یافت ہیں، ورنہ کرونا سے آتی نپی تُلتی […]