دہلیز کے پار
جمالِ ادب و شہرِ فنون

دہلیز کے پار

دہلیز کے پار افسانہ از، وفا سعادت کمرے میں داخل ہو کر ایک جانب پڑی کھلی کتاب کے پنے پلٹتے ہوئے اس کی نظریں چند سطروں پر ٹھہر سی گئیں، لفظوں کے عقب سے ماضی […]

اعظم کمال
جمالِ ادب و شہرِ فنون

بغاوت : نئی جنسی تاریخ کی ابتدا

بغاوت افسانہ از، اعظم کمال بستر کی سلوٹیں ابھی تک موجود تھیں۔ سارہ (جو کہ کل رات تک مدھو کے پہلو میں جنسی تابع فرمانی کے مروجہ اصولوں اور قواعد کے مطابق رہی تھی) کی […]

مہدی حیات
مطالعۂ خاص و فکر افروز

خوشامد پسند ثقافت ، حصہ دوئم

خوشامد پسند ثقافت 2 از، مہدی حیات اس مضمون کے حصۂِ اول کا لنک: خوشامد پسند ثقافت بیوروکریسی کا تذکرہ کرتے ہوئے وارث صاحب لکھتے ہیں: چندریگر کے زمانے میں لطیف بسواس (تعلق مشرقی پاکستان […]

ماہ رخ رانا
خبر و تبصرہ: لب آزاد ہیں تیرے

اک عجب گہما گہمی ہے

اک عجب گہما گہمی ہے از، ماہ رخ رانا ارے یہ غلط۔۔۔۔ ارے وہ غلط۔۔۔ دیکھو معاشرہ بگڑ رہا۔۔۔ تم بے حیا۔۔۔ دین کو خطرہ۔۔۔۔ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ ایک بڑا مجمع ہے اور […]

مہدی حیات
مطالعۂ خاص و فکر افروز

خوشامد پسند ثقافت

خوشامد پسند ثقافت از، مہدی حیات خوشامد کا کلچر ویسے تو دنیا بھر میں ”عام“ ہے مگر پاکستان میں کافی”خاص“ ہے۔ یہاں تو لوگو ں کو اس وقت تک روٹی ٹھیک سے ہضم نہیں ہوتی […]

Rozan Social Speaks
سوشل میڈیا کی باتیں اور مکالمے

تخلیق کار، دھرتی ماں سے محبت اور تخلیق: ایک گفتگو

تخلیق کار، دھرتی ماں سے محبت اور تخلیق: ایک گفتگو از، ایک روزن رپورٹس علی احمد فرشی: میرا عقیدہ ہے کہ جو تخلیق کار اپنی دھرتی ماں سے پیار نہیں کرتا وہ اپنی سگی ماں […]

Emran Azfar
سوشل میڈیا کی باتیں اور مکالمے

جنگی ہتھیار اور گوشت کی اسلامی اور غیر اسلامی باس

جنگی ہتھیار اور گوشت کی اسلامی اور غیر اسلامی باس از، عمران ازفر پاکستانی عوام چند ماہ پہلے کیے گئے اپنے جذباتی فیصلے کے منطقی انجام کو مختلف سطحوں پر بھگت رہے ہیں۔ اس سارے […]

بلال مختار
جمالِ ادب و شہرِ فنون

اپنا شہر

اپنا شہر کہانی از، بلال مختار بچے سکول چھوڑنے کے بعد میں سیدھا گھر لوٹ آئی تھی اور شام ڈھلے طلباء کو آن لائن کورسسز کروانے کا سلسلہ شروع ہو چکا تھا۔یہ ایسی ہی اک […]

اعظم کمال
جمالِ ادب و شہرِ فنون

کن فیکون

کن فیکون کہانی از، اعظم کمال کئی دنوں سے ان دھلا جسم، میلے کچیلے کپڑے اور بد بو کے بھبھوکے۔ وہ جب اپنی ہی غلاظت کے حبس سے دو چار ہوتا۔ “جب” اور “دو چار” […]